شام میں ترکی اور روس جنگی جرائم کے مرتکب ہوئے، اقوام متحدہ

شام میں ترکی اور روس جنگی جرائم کے مرتکب ہوئے، اقوام متحدہ

 02:47 pm  

ادلب: اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ شام کے علاقے ادلب میں کردوں کیخلاف فوجی کارروائی کے دوران ترکی اور روس ممکنہ طور پر جنگی جرائم کے مرتکب ہوئے ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے جنگی جرائم سے متعلق اعداد و شمار جمع کرنے والے ايک کميشن کی تازہ رپورٹ شائع ہوئی ہے جس میں شام کے علاقے ادلب میں فوجی کارروائیوں کا گزشتہ برس جولائی سے رواں برس فروری تک کا ہولناک ڈیٹا پیش کیا گیا ہے۔

کمیشن نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ ادلب میں ترک اور روس فوجیوں کی کردوں کے خلاف کارروائياں جنگی جرائم کے زمرے ميں آ سکتی ہيں بالخصوص ترک اور روس فضائیہ کی بمباری میں کئی معصوم لوگ اپنی جانوں سے گئے۔

رپورٹ میں یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے فوجیوں نے زیادہ تر کارروائی رہائشی علاقوں میں کی ہیں جس میں شہریوں کی املاک بھی تباہ ہوئیں اور کئی معصوم لوگ اپنی جانوں سے گئے۔ اقوام متحدہ نے دونوں ممالک کو شہریوں کو تحفظ دینے کے لیے متنبہ بھی کیا ہے۔

واضح رہے کہ ادلب میں کارروائیوں کے دوران روسی فضائیہ نے 2 درجن سے زائد ترک فوجیوں کو نشانہ بنایا تھا جس کے جواب میں ترکی نے بھی شامی اور روسی فوجیوں کو نشانہ بنایا اور دونوں جانب سے جہاں فوجیوں کی جانیں گئیں وہیں بڑے پیمانے پر معصوم شہری بھی مارے گئے۔

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں۔
Copyright © 2019 Urdu News. All Rights Reserved