لیبیا میں فوج کا سابق جنرل کے ٹھکانوں پر حملہ

لیبیا میں فوج کا سابق جنرل کے ٹھکانوں پر حملہ

 07:26 am  

طرابلس(آئی این پی)لیبیا میں عالمی تسلیم شدہ قومی مفاہمتی حکومت نے کہا ہے کہ دارالحکومت طرابلس کے جنوب میں ریٹائرڈ جنرل خلیفہ حفتر کی ملیشیا کے نئے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق لیبیا میں عالمی تسلیم شدہ قومی مفاہمتی حکومت نے کہا ہے کہ دارالحکومت طرابلس کے جنوب میں ریٹائرڈ جنرل خلیفہ حفتر کی ملیشیا کے نئے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔
یاد رہے کہ سرکاری فوج نے "برکان الغضب" نامی آپریشن شروع کر رکھا ہے جس کے ترجمان مصطفی الماجی نے بتایا ہے کہ طرابلس کے پرانے ہوائی اڈے سے ملحقہ الاحیا البریہ ، السبیعہ اور الکزرمہ کے علاقوں میں یہ کاروائی کی گئی ہے ۔ ترجمان نے بتایا کہ جھڑپوں کا سلسلہ تاحال جاری ہے تا ہم ان علاقوں کا کنٹرول سنبھا لتے ہی سابقہ ہوائی اڈے پر ہمارا قبضہ ہو جائے گا۔ ریاٹائرڈ جنرل حفتر کی ملیشیا حکومت کے خلاف 4 اپریل سے دارالحکومت کی سرکوبی کےلیے آپریشن شروع کیے ہوئے ہے ۔

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں۔
Copyright © 2019 Urdu News. All Rights Reserved