قومی ٹیم کی کوچنگ کے امیدواروں نے انٹرویوز کیلیے کمر کس لی

قومی ٹیم کی کوچنگ کے امیدواروں نے انٹرویوز کیلیے کمر کس لی

 06:53 pm  

قّومی کرکٹ ٹیم میں ہیڈ کوچ اور معاون سٹاف کے عہدوں کیلیے امیدواروں نے انٹرویوز کی بھرپور تیاریاں شروع کردی ہیں۔ہیڈ کوچ کیلیے مصباح الحق فیورٹ جب کہ محسن خان، ڈین جونز اور گرانٹ بریڈ برن  نے بھی درخواست جمع کروا رکھی ہے، وقار یونس بولنگ کوچ کیلیے امیدوار ہیں، محمد اکرم اور جلال الدین بھی اس عہدے کو سنبھالنے کی آس لگائے بیٹھے ہیں ،بیٹنگ کوچ کیلیے محمد وسیم اور فیصل اقبال نے بھی درخواست جمع کروارکھی ہے۔

پی سی بی قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ کی تعیناتی کا عمل ستمبر کے آغاز میں مکمل کرنا چاہتا ہے تاکہ 27 ستمبر سے شروع ہونے والی سری لنکا کےخلاف ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی سیریز کی  تیاریوں کا سلسلہ شروع کیا جاسکے، امیدواروں نے رواں ہفتے ہونے والے انٹرویوز کی تیاری اور پاکستان کرکٹ کیلیے اپنے پلان کا پیپر ورک بھی مکمل کررہے ہیں، مصباح الحق کے فیورٹ ہونے کے باوجود ڈین جونز نے امید کا دامن نہیں چھوڑا اور ویڈیو لنک کے ذریعے وسیم خان کی سربراہی میں کمیٹی کے سامنے اپنا کیس مضبوط بنانے کی کوشش کریں گے۔

ذرائع کے مطابق ماضی میں قومی ٹیم کے ہیڈکوچ اور چیف سلیکٹر جیسے عہدوں پر فائز رہنے والے محسن خان دوبارہ پی سی بی کیساتھ وابستگی کیلیے پر امید ہیں،موجودہ فیلڈنگ کوچ گرانٹ بریڈبرن بھی ہیڈ کوچ بننا چاہتے ہیں۔بولنگ کوچ کیلیے وقار یونس اور محمد اکرم میں مقابلہ ہے، سابق ہیڈ کوچ آسٹریلیا سے لاہور پہنچ گئے اور تیاریوں میں مصروف ہیں۔ محمد وسیم اور فیصل اقبال بھی کہہ چکے ہیں کہ اگر میرٹ پر فیصلہ ہو تو بیٹنگ کوچ کا عہدہ ان کو ہی ملے گا۔

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں۔
Copyright © 2019 Urdu News. All Rights Reserved