زیرو کرپشن اور 100 فیصد ترقی پر یقین رکھتے ہیں، چیئرمین نیب

زیرو کرپشن اور 100 فیصد ترقی پر یقین رکھتے ہیں، چیئرمین نیب

 06:04 pm  

اسلام آباد: نیب چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب زیرو کرپشن اور 100 فیصد ترقی پر یقین رکھتا ہے، نیب نے وائٹ کالر کرائم کی انویسٹی گیشن کے لیے کثیر الجہتی انسداد بدعنوانی کی حکمت عملی تشکیل دی ہے۔

نیب ہیڈ کوارٹرز کے شعبوں کی کارکردگی کے جائزے سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ نیب بدعنوانی کے خاتمے کو اپنا قومی فرض سمجھتے ہوئے اس سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے، زیرو کرپشن، سو فیصد ترقی کے لیے کرپشن فری پاکستان کے لیے پرعزم ہے، اس سے عام آدمی کو فائدہ پہنچے گا، بدعنوانی کے خاتمہ کے لیے ہم سب متحد ہیں، نیب افسران شفافیت اور میرٹ پر عمل کرتے ہوئے اپنے قومی فرائض انجام دیں۔

جسٹس(ر)جاوید اقبال نے کہا کہ نیب نے انسداد بدعنوانی کی جامع حکمت عملی وضع کی ہے، نیب کی موجودہ انتظامیہ کی جانب سے کیے گئے اقدامات سے متعلق زندگی کے تمام طبقوں نے مثبت ردعمل کا اظہار کیا ہے، نیب تحقیقات پر کسی بھی فرد کے اثر انداز ہونے کو روکنے کے لئے مشترکہ تفتیشی ٹیم کا نظام وضع کیا گیا ہے جو دو انوسٹی گیشن افسران، ایک لیگل کنسلٹنٹ، ایک فنانشل ماہر پر مشتمل ہے اور متعلقہ ایڈیشنل ڈائریکٹر کی نگرانی میں کام کرتی ہے تاکہ شفاف، غیر متعصبانہ طریقے سے انکوائری اور انوسٹی گیشن کو نمٹایا جائے جس سے مقدمات کی تفتیش کے لئے ٹھوس شواہد حاصل کرنے میں مدد ملی ہے

نیب کے مقدمات میں سزا کی شرح 70 فیصد ہے جو کہ وائٹ کالر کرائم کی انوسٹی گیشن میں کسی بھی ادارے کی شاندار کارکردگی ہے اور وائٹ کالر کرائمز کے مقدمات کی تفتیش کے لئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کے لئے جدید فرانزک سائنس لیبارٹری قائم کی ہے، نیب زیرو کرپشن اور 100 فیصد ترقی پر یقین رکھتا ہے۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ تفصیلی تجزیئے کے بعد آپریشن، پراسیکیوشن، ٹریننگ اینڈ ریسرچ، ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ، آگاہی و تدارک ڈویژن سمیت دیگر شعبوں کو اصلاحات کے ذریعے فعال بنایا گیا ہے، نیب سارک اینٹی کرپشن فورم کا چیئرمین ہے جو کہ نیب کی شاندار کارکردگی کا اعتراف ہے۔

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں۔
Copyright © 2019 Urdu News. All Rights Reserved